سرسی میں کانگریسی امیدوار انجلی نے کہا : میں اتر کنڑا والوں کو ہماری زمین، پانی کے تحفظ کی گارنٹی دیتی ہوں

Share this


سرسی میں کانگریسی امیدوار انجلی نے کہا : میں اتر کنڑا والوں کو ہماری زمین، پانی کے تحفظ کی گارنٹی دیتی ہوں



سرسی، 4 / اپریل (ایس او نیوز) سرسی بلاک کانگریس کارکنان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کانگریسی امیدوار ڈاکٹر انجلی نمبالکر نے کہا کہ میں اتر کنڑا والوں کو ہماری زمین اور پانی کے تحفظ کے علاوہ ہماری ثقافت کو عالمی سطح پر متعارف کروانے کی گارنٹی دیتی ہوں ، اس لئے مجھے آپ لوگوں کو آشیرواد چاہیے ۔

    

انہوں نے کہا کہ ہمارے لوگوں کو ان کے حقوق دلانے کا کام ہونا چاہیے ۔ انہیں ملازمتیں ملنی چاہیے ۔ یہاں کی مختلف ثقافتوں کو عالمی سطح پر متعارف کرنے کی کوشش ہونی چاہیے ۔  یہ بی جے پی اور کانگریس کے بیچ الیکشن نہیں ہے ۔ کسی کی بے عزتی کرنے کا یا ہار جیت کا الیکشن بھی نہیں ہے ۔ بلکہ غریبوں کے ساتھ جو نا انصافی ہو رہی ہے اس کے خلاف پارلمینٹ میں آواز اٹھانے کا الیکشن کا ہے ۔ میں گزشتہ 25 سال سے عوامی خدمت کر رہی ہوں ۔ مجھے لوگوں کا دکھ درد معلوم ہے ۔ 

    

ڈاکٹر انجلی نے کہا کہ سرسی اور خانہ پور میں کوئی بہت زیادہ فرق نہیں ہے ۔ دونوں طرف جنگلاتی زمین اتی کرم کے مسائل ہیں ۔ پورے اتر کنڑا کے عوام کو یقین دلاتی ہوں کہ میں آپ کی آواز بن کر پارلیمنٹ میں  جاوں گی ۔ پارلیمنٹ کے پہلے اجلاس میں ہی اتی کرم کا مسئلہ اٹھاوں گی ۔ اس کے لئے میں آپ کے کندھے سے کندھا ملا کر جد و جہد کروں گی ۔

    

سینئر کانگریسی رکن اسمبلی آر وی دیشپانڈے نے کہا کہ ڈاکٹر بابا صاحب امبیڈکر کے ذریعے دیش کو دئے گئے دستور کے مطابق جمہوری طرز پر حکومت چل رہی ہے ، لیکن یہاں کے رکن پارلیمان  کہتے ہیں کہ اگر مکمل اکثریت کے ساتھ اقتدار ملا تو دستور کو بدل دیں گے ۔ ہماری گارنٹیوں کا مذاق اڑانے والے وزیر اعظم اب “یہ مودی کی گارنٹی ہے” کہنے لگے ہیں ۔ ہبلی انکولہ ریلوے لائن منصوبے کو عمل میں لانے کے لئے رکن پارلیمان نے کوشش نہیں کی ۔ آپ لوگوں نے بھی ان سے سوال نہیں کیا ۔

وزیر اعظم نے نوکریاں دلانے کی بات کی تھی مگر بے روزگاری اب ایک سنگین مسئلہ بن گیا ہے ۔ کانگریس پارٹی غیر حقیقی باتیں نہیں کرتی ۔ جو کہتی ہے اس پر عمل کرکے دکھاتی ہے ۔ ڈاکٹر انجلی خانہ پور – سرسی کی امیدوار نہیں بلکہ کانگریس کی امیدوار ہیں ۔ اس ضلع کی امیدوار ہیں ۔ انہیں جیت دلانے کی ذمہ داری ہم سب کی ہے ۔

    

ضلع انچارج وزیر منکال وئیدیا نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی نے جھوٹ بولنے کے سوا کوئی ترقیاتی کام نہیں کیا ہے ۔ انہوں نے کھلے عام کہا تھا کہ ہم ترقیاتی کاموں کے لئے چنے نہیں گئے ۔ چناو کے لئے پھر کوئی نیا جھوٹ لے کر بی جے پی والے آئیں گے ۔ وہاں کارکنان سے لے کر وزیر اعظم تک صرف جھوٹ بولنے والے موجود ہیں ۔ انہوں نے تاریخ میں کبھی سچ نہیں بولا ۔ ضلع کے عوام کو درپیش جنگلاتی زمین اتی کرم کے مسئلے پر رکن پارلیمان نے ایک مرتبہ بھی پارلیمنٹ میں بات نہیں کی ۔ اس لئے آپ لوگ سوچ سمجھ کر ہی ووٹ ڈالیں ۔ ہم اپنا وعدہ پورا کرتے ہوئے پانچ گارنٹیوں کو لاگو کرنے کے بعد پھر ایک بار آپ لوگوں سے ڈاکٹر انجلی نمبالکر کو جیت دلانے کی مانگ کر رہے ہیں ۔ 

    

اس موقع پر سرسی ایم ایل اے بھیمنّا نائک، کانگریس ضلع صدر سائی گاونکر، ایڈوکیٹ جی ٹی نائک، وغیرہ نے خطاب کرتے ہوئے بی جے پی کی ناکامیوں اور کانگریس کی طرف سے جاری کی گئی گارنٹیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے پارٹی کی امیدوار ڈاکٹر انجلی نمبالکر کو جیت دلانے کی اپیل کی ۔ 



ایک نظر اس پر بھی

ہوناور میں تجارتی بندرگاہ کی تعمیر – ایڈی یورپّا کے زمانے میں ریاستی حکومت نے منظور کیا تھا منصوبہ  

کاسرکوڈ کے ٹونکا میں نجی تجارتی بندرگاہ تعمیر کرنے کا معاملہ گزشتہ دس برسوں سے تنازع میں پھنسا ہوا ہے اور آج بھی ماہی گیروں کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتظامیہ کے تعاون سے دفعہ 144 کے تحت امتناعی احکامات نافذ کرتے ہوئے پولیس کی سخت نگرانی میں متنازعہ منصوبے کے لئے سڑک کی تعمیر …

23 Hours Ago

کاسرکوڈ ٹونکا ساحل کنارے شروع ہو رہی ہے سڑک کی تعمیر

کاسرکوڈٹونکا کے ساحلی کنارے  پر مجوزہ تجارتی بندرگاہ کے منصوبے کے تحت گزشتہ سال جو سڑک کی تعمیر کا کام مقامی ماہی گیروں کے احتجاجی کی وجہ سے ادھورا چھوڑا گیا تھا اب پولیس کی کڑی نگرانی میں اسے مکمل کرنے کی تیاری ہو رہی ہے ۔

1 Day Ago

بھٹکل؛ اتر کنڑا میں کانگریسی امیدوار کی جیت کے لئے ایک ہوگئے سابق اور موجودہ وزراء

پارلیمانی الیکشن میں اتر کنڑا حلقے سے کانگریسی امیدوار ڈاکٹر انجلی نمبالکر کو جیت سے ہمکنار کرنے کے لئے سابق وزیر آر وی دیشپانڈے اور موجودہ وزیر منکال وئیدیا نے ہاتھ ملایا ہے جسے کانگریسی پارٹی کے لئے اچھی علامت سمجھا جا رہا ہے ۔

1 Day Ago

بھٹکل سنڈے مارکیٹ: بیوپاریوں کا سڑک پر قبضہ – ٹریفک کے لئے بڑا مسئلہ 

شہر بڑا ہو یا چھوٹا قصبہ ہفتہ واری مارکیٹ عوام کی ایک اہم ضرورت ہوتی ہے، جہاں آس پاس کے گاوں، قریوں سے آنے والے کسانوں کو مناسب داموں پر روزمرہ ضرورت کی چیزیں اور خاص کرکے ترکاری ، پھل فروٹ جیسی زرعی پیدوار فروخت کرنے اور عوام کو سستے داموں پر اسے خریدنے کا ایک اچھا موقع ملتا ہے …

1 Day Ago



Source link