بھٹکل تنظیم نے ہیسکام سے کی عیدالفطر کے موقع پر بجلی فیل کو روکنے پیشگی اقدامات کی درخواست

Share this


بھٹکل 4/اپریل  (ایس او نیوز)  رمضان کا آخری عشرہ شرو ع ہوتے ہی  بھٹکل میں ایک دو گھنٹوں کے لئے  بجلی فیل ہونے کی شکایتیں  سامنے آنے کے بعد  قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم  کے ایک وفد نے  ہیسکام (ہبلی الیکٹری سٹی کمپنی) کے دفتر پہنچ کر اسسٹنٹ انجینئر منجوناتھ سے ملاقات کی اور انہیں میمورنڈم پیش کرتے ہوئے  اُن سے  درخواست کی کہ عید الفطر کے لئے بمشکل پانچ چھ دن رہ گئے ہیں، ایسے میں اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ بجلی فیل نہ ہونے پائے اور اگر کسی وجہ سے بجلی فیل ہوتی ہے تو  فوری طور پر  اُس کی مرمت کرتے ہوئے بجلی سپلائی کو جلد سے جلد بحال کرنے کے اقدامات کئے جائیں۔

وفد کی قیادت کرتے ہوئے  تنظیم کے نائب صدر اور رابطہ سوسائٹی کے جنرل سکریٹری عتیق الرحمن منیری اور تنظیم کے جنرل سکریٹری عبدالرقیب ایم جے ندوی نے بتایا کہ  بھٹکل میں پچھلے کچھ دنوں سے گرمی کی شدت سے لوگ پہلے ہی پریشان ہیں،  ایسے میں رات کی تراویح نماز کے دوران اچانک بجلی  فیل ہوجانے سے   لوگوں کو کیسی پریشانی ہوتی ہوگی اس کا آپ خود اندازہ لگاسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ عوام تنظیم کے ذمہ داران کو فون کرکے  شکایتیں کررہے ہیں کہ مسلمانوں کے تہوار کے موقعوں پر جان بوجھ کر بجلی منقطع کی جارہی  ہے ۔ اس موقع پر بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کے صدر عزیزالرحمن رکن الدین ندوی نے بتایا کہ  اُنہیں  شکایتیں مل رہی ہیں کہ کچھ شرپسند عناصر مسلمانوں کے تہوار کے موقع پر  دور دراز اور غیر آباد علاقوں میں جاکر بجلی  لائن کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرتے ہیں جس کی وجہ سے بجلی منقطع ہوجاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ   اس طرح کی شکایتوں کو دیکھتے ہوئے پیشگی اقدامات کئے جائیں ۔

عبدالرقیب ایم جے ندوی نے بتایا کہ پانچ چھ دن بعد عید الفطر  ہے، اگر ہمارے تہوار کے موقع پر بجلی    فیل ہوجائے گی تو عوام  کو سنبھالنا ہمارے لئے مشکل ہوجائے گا، ہم چاہتے ہیں کہ  عید الفطر کو دیکھتے ہوئے  بجلی سپلائی کی طرف خصوصی توجہ دی جائے اور ضروری  پیشگی اقدامات کئے جائیں۔

جواب دیتے ہوئے  ہیسکام کے اسسٹنٹ انجینر منجوناتھ نے  بتایا کہ  عیدالفطر تہوار کےمدنظر ہم نے  تمام لائن مینوں کو ابھی سے  24X7 کام کرنے کی ہدایت  دی  ہے، کسی کو چھٹی نہیں دی جارہی ہے، پورے عملہ کو چوکس بنایا گیا ہے، ہم نے حال ہی میں تمام لائن مینوں کے ساتھ  میٹنگ کا انعقاد کرکے بھی ضروری ہدایات دی ہیں کہ بجلی  سپلائی متاثر  نہ ہونے پائے اور اگر کسی وجہ سے بجلی سپلائی میں رُکاوٹ پید ا ہوتی ہے تو فوری اس کی بحالی کی طرف توجہ دی جائے۔ منجوناتھ نے بتایا کہ ہیسکام ایک کمپنی ہے، اگر بجلی  فیل ہوجاتی ہے تو  کمپنی کو  فی گھنٹہ لاکھوں روپیوں کا نقصان ہوتا ہے، ہم کبھی ایسا نہیں چاہیں گے  کہ   ہیسکام کو نقصان ہو۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ پورے اُترکنڑا ضلع میں ہیسکام کو سب سے زیادہ منافع بھٹکل سے حاصل ہوتا ہے یہی وجہ ہے کہ ہم  بھٹکل میں بجلی سروس کو بہتر بنانے کے لئے زیادہ سے زیادہ کوشش کرتے ہیں۔  البتہ کبھی کبھار  ہمارے نہ چاہتے ہوئے بھی  کہیں سے بجلی  میں گڑبڑھ  ہوجاتی ہے، مگر ہمارے اہلکار رات ہو یادن ،       دور دراز اور جنگلاتی علاقوں میں پہنچ کر بجلی سپلائی کو فوراً بحال کرنے میں لگ جاتے ہیں ۔  

منجوناتھ نے تنظیم وفد کو یقین دلایا کہ وہ اس تعلق سے    بالکل چوکس رہیں گے، ہرممکن  کوشش کریں گے کہ بجلی سپلائی میں خرابی نہ ہونے پائے،آگے کہا کہ اس تعلق سے ہم نے تمام پیشگی اقدامات کئے ہیں اور ہماری پوری کوشش ہے کہ    مسلمان بھائی عید الفطر کا تہوار   روایتی جوش و خروش کے ساتھ منائیں اور مسلمانوں کو ہیسکام سے کسی بھی طرح کی شکایت کا موقع نہ ملے۔

تنظیم وفد میں   جیلانی شاہ بندری، کلّاگر محمد حُسین معلم  اور  عبدالسمیع کولا بھی موجود تھے۔



Source link